ہم شہریوں کے خلاف اسرائیل کے فوجی طاقت کا استعمال کرنے کی مذمت کرتے ہیں

ہم، امریکی سفارت خانے کی تل ابیب سے بیت المقدس منتقلی کے خلاف پُرامن مظاہروں کے دوران شہریوں کے خلاف اسرائیل کے فوجی طاقت کا استعمال کرنے کی مذمت کرتے ہیں: ماریہ زاہارووا

ہم شہریوں کے خلاف اسرائیل کے فوجی طاقت کا استعمال کرنے کی مذمت کرتے ہیں

روس نے فلسطینیوں کے خلاف فوجی طاقت کے استعمال کی مذمت کی ہے۔

روس کی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریہ زاہارووا نے کہا ہے کہ ہم، امریکی سفارت خانے کی تل ابیب سے بیت المقدس منتقلی کے خلاف پُرامن مظاہروں کے دوران شہریوں کے خلاف اسرائیل کے فوجی طاقت کا استعمال کرنے کی مذمت کرتے ہیں۔

زاہارووا نے کہا کہ روس کی بیت المقدس پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔

بیت المقدس کو دو آزاد حکومتوں کی حیثیت سے فلسطین اور اسرائیل کا دارالحکومت ہونا چاہیے اور اسے تین سماوی ادیان میں سے ہر ایک کے لئے کھلا ہونا چاہیے۔

روس کے غزہ کی پیچیدہ ہوتی صورتحال پر شدید تشویش محسوس کرنے کا ذکر کرتے ہوئے زاہارووا نے فریقین سے اسے اقدامات سے پرہیز کرنے کی اپیل کی ہے کہ جن سے تناو میں مزید اضافہ ہونے کا خطرہ ہو۔

انہوں نے کہا کہ ہم فلسطینیوں کے پُر امن مظاہروں کے حق کو قبول کرتے ہیں اور شہریوں کے خلاف فوجی طاقت کے استعمال کی مذمت کرتے ہیں۔



متعللقہ خبریں