"آزادی فلسطین عرب عوام کی صدائے ضمیر ہے"20 کروڑ ڈالر امداد دینےکا بھی اعلان کیا:شاہ سلمان

سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے29 ویں عرب سربراہی اجلاس کے موقع پر کہا کہ فلسطین عرب عوام کے ضمیر میں  زندہ ہے جبکہ حکومت 20 کروڑ ڈالرز کی امداد دینے کا بھی اعلان کر رہی ہے

"آزادی فلسطین عرب عوام کی صدائے ضمیر ہے"20 کروڑ ڈالر امداد دینےکا بھی اعلان کیا:شاہ سلمان

سعودی عرب کے شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے دہران میں  گزشتہ روز 29 ویں  عرب سربراہی اجلاس کا افتتاح کردیا ہے۔

شاہ سلمان نے اپنی افتتاحی تقریر میں کہا کہ مسئلہ فلسطین ہمارا اوّلین  مسئلہ  ہے اور ہم اس کو ہمیشہ مقدم جانیں گے۔

 انھوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ کے تل ابیب سے اپنا سفارت خانہ بیت المقدس منتقل کرنے کے فیصلے کی مذمت کی۔

انھوں نے عرب لیگ کے اس سربراہ اجلاس کو ’’ القدس کانفرنس‘‘ سے موسوم کیا  تاکہ دنیا بھر میں ہر کسی کو یہ باور کرایا جاسکے کہ فلسطین عرب عوام کے ضمیر میں  زندہ ہے۔

 سعودی فرماں روا   نے یہ بات زور دے کر کہی ہے کہ مشرقی القدس کو آزاد فلسطینی ریاست کا دارالحکومت ہونا چاہیے۔

انھوں نے فلسطینیوں کے لیے 20 کروڑ ڈالرز کی امداد کا علان کیا ہےجس میں سے پانچ کروڑ ڈالرز فلسطینی مہاجرین کی ذمے دار اقوام متحدہ کی ایجنسی" اُنروا "کو دیے جائیں گے جبکہ  پندرہ کروڑ ڈالرز مقبوضہ القدس میں اسلامی وقف  برائے امداد  پروگرام کے لیے مختص ہونگے۔

 



متعللقہ خبریں