ایران میں اقتصادی مسائل، افغان مہاجرین واپس لوٹ رہے ہیں

ایران میں اقتصادی مسائل میں اضافے  کی وجہ سے ملک میں موجود 7 لاکھ سے زائد غیر رجسٹرڈ افغان باشندے اپنے ملک واپس لوٹ گئے

iran'daki afgan gocmenler1.jpg

ایران میں اقتصادی مسائل میں اضافے  کی وجہ سے ملک میں موجود 7 لاکھ سے زائد غیر رجسٹرڈ افغان باشندے اپنے ملک واپس لوٹ گئے ہیں۔

اقوام متحدہ کی  مائیگریشن آرگنائزیشن کی طرف سے شائع کردہ رپورٹ کے مطابق یکم دسمبر سے ایران سے اپنے ملک واپس لوٹنے والے غیر رجسٹرڈ افغان مہاجرین کی تعداد 7 لاکھ 21 ہزار تک پہنچ چکی ہے۔

رپورٹ کے مطابق ایران میں کرنسی کی قدر میں تیزی سے اور اہم سطح پر کمی اور اس ملک میں درپیش سیاسی و اقتصادی بحران افغان مہاجرین کی ملک واپسی  کا سبب بننے والے اہم ترین عناصر ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران میں افغان لیبر فورس  کی طلب میں تیزی سے کمی کی وجہ سے یہ مہاجرین  بے روزگار ہونے لگے تھے ۔ اس کے علاوہ اپنی کمائی ہوئی آمدنی  کو اپنے ملک نہ بھجوا سکنے کی وجہ سے افغان اقتصادیات کو بھی مشکلات کا سامنا ہوا ہے۔

ایرانی ذرائع ابلاغ کے مطابق ملک کو ترک کرنے والے افغانیوں کا ایک بڑا حصہ ملک واپس لوٹ  گیا ہے جبکہ باقی  حصہ براستہ ترکی یورپ جانے کی کوشش کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ رواں سال میں ایران کی کرنسی کی قدر میں 70 فیصد کمی آئی ہے۔



متعللقہ خبریں