مشرف بہادرہےتوپاکستان آکردکھائے، ان کوگرفتارنہیں کیاجائے گا، قانون کے تحت کاروائی ہوگی: چیف جسٹس

انہوں نے کہا کہ اب مشرف کے لے پاکستان  آنے کے تمام دروازے کھول دیے گئے ہیں  اور اب دیکھنا یہ ہے کہ مشرف  کتنے بہادر ہیں اور وہ کس طرح اپنے مقدمات کا سامنا  کرتے ہیں۔ وہ پاکستان آئیں گے توقانون کے تحت کارروائی ہوگی

مشرف بہادرہےتوپاکستان آکردکھائے، ان کوگرفتارنہیں کیاجائے گا، قانون کے تحت کاروائی ہوگی: چیف جسٹس

سپریم کورٹ میں اصغرخان کیس کی سماعت میں چیف جسٹس نے کہا کہ پرویز مشرف کو پاکستان آنے میں جورکاوٹ تھی وہ ختم کردی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اب مشرف کے لے پاکستان  آنے کے تمام دروازے کھول دیے گئے ہیں  اور اب دیکھنا یہ ہے کہ مشرف  کتنے بہادر ہیں اور وہ کس طرح اپنے مقدمات کا سامنا  کرتے ہیں۔ وہ پاکستان آئیں گے توقانون کے تحت کارروائی ہوگی۔

سپریم کورٹ لاہوررجسٹری میں اصغرخان کیس پرعمل درآمدکےمعاملے پرچیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی فل بینچ نےسماعت کی ۔

چیف جسٹس  نے نواز شریف کو گرفتار کئے بغیر مقدمہ چلا  کر مشرف کو یہ سمجھانے کی کوشش کی ہے کہ  ان پر بھی گرفتار کیے بغیر مقدمہ چلا یا جاسکتا ہے۔

انہوں نے   مشرف  کو  انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت بھی دے دی، پچھلی بار وہ کاغذات مسترد ہونے کی وجہ سے انتخابات میں حصہ نہیں لے سکے، اتنی بڑی سہولت کے باوجود پرویز مشرف کا واپس نہ آنا، لیت و لعل سے کام لینا اور ساتھ ہی انہونی ضمانتیں مانگنا ان کی بزدلی اور کمزوری کو ظاہر کرتا ہے۔

اپنے آپ کو بہادر کمانڈوز کہلوانے والے   مشرف واپس  پاکستان آکر اپنی بہادری کا ثبوت پیش کرسکتے ہیں۔

دریں اثنا پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کئِ بار کہہ چکے ہیں  کہ مشرف جیسا بزدل آدمی کبھی نہیں دیکھا، مشرف پر کتنے کیسز ہیں گن نہیں سکتے، مشرف اتنے بہادر ہیں تو پاکستان آ کر جواب دیں۔انہوں نے کہا کہ  اتنا بزدل آدمی زندگی میں نہیں دیکھا جو عدالت جاتے ہوئے روئے۔



متعللقہ خبریں