اس ملک میں نسل پرستی کرنے والوں کو ہمارا سامنا کرنا پڑے گا، صدرِ رجب طیب ایردوان

ہمارے خطے میں مذموم کاروائیاں کرنے والوں کے ہاتھو ں میں کٹھ پتلی بنتے ہوئے اس عوام کی خدمت نہیں کی جا سکتی

اس ملک میں نسل پرستی کرنے والوں کو ہمارا سامنا کرنا پڑے گا، صدرِ رجب طیب ایردوان

صدر  رجب طیب ایردوان کا کہنا ہے کہ وہ ترکی میں نسلی تفریق بازی کرنے والوں کے خلاف محاذ آرائی کریں گے۔

ضلع دیار باقر  میں یوتھ فیسٹیول کی اختتامی تقریب  سے خطاب کرنے والے جناب ایردوان نے  اس بات پر زور دیا کہ ہم دیار باقر کا استحصال کرنے کے بجائے اس کی نشاط، ترقی، امن و خوشحالی   کے  لیے سرگرمِ عمل ہیں۔

ترکی کے آج اپنے دفاع اور مستقبل کی نشاط کی کوششیں صرف کرنے کی وضاحت کرنے والے صدرِ ترکی نے بتایا کہ"اللہ تعالی کا لاکھ لاکھ شکر ہے کہ ہم نے ان دونوں معاملات میں اہم سطح کی پیش رفت کی ہے۔"

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے خطے میں مذموم کاروائیاں کرنے والوں کے ہاتھو ں میں کٹھ پتلی بنتے ہوئے اس عوام کی خدمت نہیں کی جا سکتی ،  اپنے وقار  و ناموس کو ایک ڈالر کے عوض فتح اللہ گولین کو  بیچنے والے فیتو نواز لوگوں  اور اسلام کے نام پر قتل و غارت کرنے والےداعش کے درندوں  کا اپنے وطن کا بٹوارہ کرنے  کے لیے گولیاں چلانے والے PKK کے دہشت گردوں کے درمیان کوئی فرق نہیں پایا جاتا۔

صدر نے کہا کہ نام اور دعوی چاہے کچھ بھی کیوں نہ ہو ہم تمام تر دہشت گرد تنظیموں کے عزائم یکساں ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم  اس ملک میں نسل پرستی  کرنے والوں  کونہیں چھوڑیں گے۔ اپنے لیے کسی دوسری شناخت کا متلاشی، کسی دوسری ریاست میں پناہ لینے والا  جیسا کہ ماضی قریب میں متعدد مثالوں کا مشاہدہ ہوا ہے ،اس شخص کا اپنے گھربار کے ساتھ ساتھ اپنے کنبے اور وقار کو بھی کھو دینا نا گزیر بن  جائیگا۔



متعللقہ خبریں